A+ R A-
22 اگست 2017
RSS Facebook Twitter Linkedin Digg Yahoo Delicious

Ads1

قومی خبریں

قومی خبریں (18)

قومی خبریں

اسلام آباد: ملک کے میدانی علاقوں میں جون کے مہینے کی روایتی گرمی اپنا جوبن دکھا رہی ہے اور آئندہ چند روز تک گرمی کی شدت میں کمی کا بھی کوئی امکان نہیں۔  

محکمہ موسمایت کے مطابق ملک کے اکثر میدانی ا ور بالائی علاقوں میں شدید گرمی کی لہر جاری ہے اور یہ لہر جنوبی علاقوں کے بعد اب بالائی علاقوں کو بھی اپنی لپیٹ میں لے رہی ہے۔ ملک میں آج سب سے زیادہ درجہ حرارت لاڑکانہ میں ریکارڈ کیا گیا جہاں پارہ 50 ڈگری تک چڑھ گیا، اس کے علاوہ جیکب آباد میں 49، بھکر، نورپور تھل، تربت، روہڑی، سبی ، سکھر  اور موہن جو داڑو میں 48،رحیم یار خان ، حیدر آباد، پڈ عیدن، اوکاڑہ،۔بےنظیر آباد اور شور کوٹ میں 47 ڈگری ریکارڈ کیا گیا۔

جھنگ، ڈی جی خان، ڈی آئی خان، ساہیوال اور خان پور میں بھی شدید گرمی پڑی جہاں کا  درجہ حرارت46 ڈگری سینٹی گریڈ ریکارڈ کیا گیا جب کہ گرمی کے معاملے میں  میر پور خاص، مٹھی، فیصل آباد، ملتان، منڈی بہاؤلدین اور لاہوربھی کسی سے پیچھے نہ رہے اوریہاں کا درجہ حرارت 45 ڈگری سینٹی گریڈ ریکارڈ کیا گیا۔

ماہرین کا کہنا ہے کہ آئندہ چند روز کے دوران ملک کے بیشتر حصوں میں موسم شدید گرم اور خشک رہنے کا امکان ہے تاہم ہفتے اور اتوار سے ملک کے بالائی علاقوں میں گرمی کی شدت میں کمی کا امکان ہے۔

معروف مذہبی اور سماجی کارکن قاری نظام الدین نے اپنے ایک بیان میں کہاہے کہ حکومت جنگ گروپ اور جیو نیوز پر فی الفور پابندی لگائے۔ اس میڈیا گروپ نے اب تک اپنے مغربی اور ہندو آقاوٗں کے کہنے پر اسلام ،نظریہ پاکستان اور پاکستان کے دفاعی اداروں کی بیخ کنی میں کوئی کسر نہیں چھوڑی ہے۔ جیو نیوز نے پہلے پاکستانی انٹیلی جنس اور فوج پر شدید قسم کے الزامات لگائے اور پورے عالم میں پاکستانی دفاعی اداروں کو بدنام کیا۔ یہ آگ ٹھنڈی نہیں ہوئی تھی کہ اپنے ایک پروگرام میں اہلبیت کےشان میں گستاخی کی۔اس طرح مسلمانوں کے جزبات کو شدید دھچکا پہنچادیا۔ اس معاملے پر کوئی مسلمان چپ نہیں رہ سکتا اور حکومت کو آگاہ کیا جاتاہے کہ مذکورہ میڈیا گروپ کو سخت سے سخت سزادیجائے ۔
ساتھ ساتھ مسلمانوں سے اپیل ہے کہ وہ مذکورہ میڈیا گروپ کے ٹی وی چینل جیو اور دوسرے تمام فحاشی پھیلانے والے چینلوں کا بائیکاٹ کریں۔یہ شیطانی میڈیا پہلے فحاشی پھیلاتے ہیں اور مسلمانوں کے دین وایمان کو کمزور کرتے ہیں اور پھر شعائر اسلام کا مذاق اڑاتے ہیں اور شان انبیاٗ ، شان صحابہ اور علمائے کرام کی تضحیک پر اتر کر کھلم کھلا کفر اور ارتداد کا راستہ اختیار کرلیتے ہیں۔

باجوڑ: نواگئی میں سیکیورٹی فورسز کی گاڑی کے قریب بارودی سرنگ کے دھماکے سے ایک اہلکار شہید جب کہ 2 زخمی ہو گئے۔

 

 

ایکسپریس نیوز کے مطابق باجوڑ ایجنسی کی تحصیل نواگئی میں سیکیورٹی فورسز کی گاڑی کو سڑک کنارے نصب بارودی سرنگ کے ذریعے نشانہ بنایا گیا جس کے نتیجے میں ایک اہلکار شہید جب کہ 2 زخمی ہو گئے۔ زخمیوں کو ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹر اسپتال منتقل کر دیا گیا ہے جہاں انھیں طبی امداد دی جا رہی ہے۔ دوسری جانب سیکیورٹی فورسز نے علاقے کو گھیرے میں لے کر سرچ آپریشن شروع کر دیا ہے۔

 

واضح رہے کہ 4 روز قبل بھی کرم ایجنسی سے پارا چنار جاتے ہوئے ایک گاڑی خومتہ کے مقام پر بارودی سرنگ سے ٹکرا گئی تھی جس کے نتیجے میں 6 افراد ہلاک اور 3 زخمی ہو گئے تھے۔

خیبر پخونخواہ میں ایس آر ایس پی کے پہلے آزمائشی شمسی توانائی آب پاشی اسیکم کا افتتاح

درو ش (کے اے جمیل) خیر آباد دروش سر حد رورل سپورٹ پروگرام
نے شمسی توانائی کے ذریعے چلنے والے آبپاشی اسکیم کا افتتاح کیا ۔ اس موقع پر ایم این اے چترال شہزادہ افتخار الدین، ایم پی اے سردار حسین، ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر غلام حسین، ایس آر ایس پی کے سربراہ شہزادہ مسعود الملک کے علاوہ بڑی تعداد میں چترال بھر سے علماء، سیاسی و سماجی زعماء ، مختلف سرکاری و غیر سرکاری اداروں کے سربراہان اور میڈیا کے نمائندگان نے شرکت کیں۔

اس موقع پر ایس آر ایس پی کے ڈسٹرکٹ پروگرام منیجر طارق احمد اور پیس پراجیکٹ کے سربراہ زاہد نے شمسی توانائی کے اس اہم منصوبے کے مختلف پہلوؤں پر روشنی ڈالی۔ انہوں نے بتایا کہ اس اسکیم سے 80ہزار گیلن پانی فراہم ہوگی جس علاقے کے لوگوں کو معاشی فوائد حاصل ہونگے۔ انہوں نے بتایا کہ یہ اسکیم آزمائشی بنیاد پر صوبے خیبر پختونخوا میں صرف چترال کے گاؤں خیر آباد میں شروع کی گئی ہے اور اگر یہ تجربہ کامیاب رہا تو اسے چترال سمیت صوبے کے دیگر علاقوں میں بھی شروع کیا جائیگا جس ایک حقیقی انقلاب آئیگا۔
اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے رکن قومی اسمبلی شہزادہ افتخار الدین اور رکن صوبائی اسمبلی سید سردار حسین نے چترال کی ترقی میں SRSPکے کردار کو سراہا اور تجویز پیش کی کہ SRSPاور دیگر ادارے چترال میں شمسی توانائی کے اس شعبے کو ترقی دیں۔
ایس آر ایس پی کے چیف ایگزیکٹیو آفیسر شہزادہ مسعود الملک نے حاضرین سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ان کا ادارہ چترال میں مقامی لوگوں کی شراکت سے غربت کے خاتمے اور بنیادی ڈھانچے کی بہتری کے لئے کام کرتی ہے اور یہ سلسلہ چلتا رہیگا۔ انہوں نے مقامی لوگوں پر زور دیا کہ وہ اپنے دیہی تنظیمات کو مزید مضبوط کریں تا کہ ترقی کے ثمرات سے بھرپور فائدہ حاصل کیا جا سکے۔
واضح رہے کہ خیر آباد دروش میں ایس آر ایس پی کے زیر اہتمام ہونیوالا یہ منصوبہ یورپی یونین کے فنڈ سے چلنے والے پیس (PEACE) پراجیکٹ کے تحت مکمل کیا گیا ہے جس سے بڑے توقعات وابستہ کئے گئے ہیں

صفحہ 2 کا 2

چارسده فیس بک پر لائک کریں

چارسده فوٹو گیلری

Advertisement