A+ R A-
27 جولائی 2017
RSS Facebook Twitter Linkedin Digg Yahoo Delicious

Ads1

بنوں (نیوز ڈیسک) آپریشن ضرب عضب کو شروع ہوئے تقریباً ایک ماہ ہونے کو ہے ،اس آپریشن سے لاکھوں لوگ متاثر ہوئے ہیں لیکن ایک شخص ایسا بھی ہے جو کہتا ہے کہ اس آپریشن کا سب سے زیادہ نقصان اسے ہوا ہے اور اس کی چوتھی شادی تاخیر کا شکار ہو گئی ہے اور اب اس کے لئے اسے مزید انتظار کرنا پڑے گا۔ شمالی وزیرستان کے گاﺅں ساوا سے نقل مکانی کرنے والے شخص گلزار خان کا کہنا ہے کہ اس آپریشن کی وجہ سے وہ چوتھی شادی سے محروم ہوگیا ہے۔ 54 سالہ گلزار خان جس کے پہلے ہی 35 بچے اور 100 سے زائد پوتے، پوتیاں اور نواسے نواسیاں ہیں کا کہنا ہے کہ اس نے دن رات محنت کرکے چوتھی شادی کے لئے رقم بچائی تھی لیکن جب آرمی آپریشن کا آغازہوا تو مجبوراً اپنے اہل خانہ کے ساتھ نقل مکانی کرنا پڑی اور اس دوران بچائی گئی رقم خرچ ہوگئی۔ اس کا کہنا تھا کہ اس کی تینوں بیویوں نے چوتھی شادی کی اجازت دے دی ہے۔ گلزار خان کی پہلی شادی 17 سال کی عمر میں 14 سالہ کزن کے ساتھ ہوئی۔ صرف آٹھ سال بعد اس نے دوسری شادی کی۔ اس نے تیسری شادی اپنے بھائی کی بیوی کے ساتھ کی کیونکہ وہ شادی کے صرف ایک ہفتے بعد بیوہ ہوگئی تھی۔ گلزار خان نے تقریباً 16 سال دبئی میں ٹیکسی بھی چلائی اور خوب مال بنایا۔ اس کا کہنا ہے کہ اسے گناہ کی زندگی سے نفرت ہے لہٰذا وہ شادی کرکے اپنی جائز خواہشات پوری کرتا ہے۔

Published in قومی خبریں

چارسده فیس بک پر لائک کریں

چارسده فوٹو گیلری

Advertisement