A+ R A-
17 اکتوبر 2017
RSS Facebook Twitter Linkedin Digg Yahoo Delicious

Ads1

جمعرات, 05 جون 2014 20:07

غنی خان Featured

Written by 
Rate this item
(0 votes)

غنی خان ۱۹۴۴ میں هشتنگر میں پیدا هوا ،

 

انهیں ۲۰ ویں صدی کا عظیم شاعر مانا جاتا هے اور حوشحال خان خٹک اور رحمان بابا کا درجه دیا جاتا هے، آپ سرخ پوش لیڈر اور سرحدی گاندهی خان عبدالغفار خان کے بیٹے تهے. آپ کی بیوی روشن ایک پارسی خاندان سے تعلق رکهتی تهی جو که  نواب رستم جنگ کی بیٹی تهی،  ان کی تین اولاد ، دو بیٹیان شاندانه اور زرین، اور بیٹا فریدن تها

 

.
انہوں نے رابندر ناتھ ٹیگور کے شانتی نکیتن آرٹ اکیڈمی میں تعلیم حاصل کرنے کیلیے انگلینڈ کا دوره کیا،  اور پینٹنگ اور مورتی بنانے کا فن حاصل کیا.وہ واپس آئے ، اس کی بعد امریکه سے شوگر ٹکنالوجی میں تعلیم حاصل کی اور واپس آکر تخت بهائی شوگر ملز میں نوکری کی.  اپنے باپ کی سیاسی اثر رسوخ کی وجه سی سیاست میں حصه لینا شروع کیا اور پختنوں کی آزادی کے لیے جدوجهد کی. ۱۹۴۸ میں گرفتار هوئے ، اگرچه انهوں نے سیاست ترک کی تهی پهر بهی ۱۹۵۴ تک جیل میں رهے ،

 

اس دوران مختلف جیلوں میں رهے،  جیل کے ان تین سالوں میں اس نے اپنی زندگی کی سب سے بهتریں شعری مجموعه " د پنجرے چغار " لکها ،  عهد جوانی کی چند غزلوں اور نظموں کے علاوه ان کے تمام شاعری سیاست کی مخالف هے ،  ان کی اور دو شعری مجموعے پانوس اور پلوشے هیں ، ۱۹۵۸ میں انهوں نے ایک مختصر کتاب پٹهان شائع کی ، جوکه ان کی شاعرانه مزاج اور ان کی پینٹنگ اور مورتی بنانے کی طرح ، ان کے مزاج کی ترجمان ن تهی،  ۱۹۹۶ میں اس عظیم شاعر کا انتقال هوا.
ان کی شاعری میں وطن سے محبت، سیاست سے نفرت ، اور ایک گهرا فلسفی انداز نمایاں هے

 

.

Read 3202 times Last modified on بدھ, 11 جون 2014 20:55
More in this category: شوکت لالا »
Login to post comments

چارسده فیس بک پر لائک کریں

چارسده فوٹو گیلری

Advertisement