A+ R A-
19 نومبر 2017
RSS Facebook Twitter Linkedin Digg Yahoo Delicious

Ads1

اسلام آباد: پمز اسپتال میں نامعلوم شخص کی فائرنگ سے ماہر امراض قلب شدید زخمی ہوگئے۔

 

پمز اسپتال میں تعینات ماہر امراض قلب ڈاکٹر شاہد نواز مریضوں کے معائنے کے بعد عمارت سے باہر ہی نکلے تھے کہ ایک شخص ان پر فائرنگ کرکے فرار ہوگیا۔ ڈاکٹر شاہد نواز کو فوری طور پر سرجیکل وارڈ کے شعبہ انتہائی نگہداشت میں منتقل کرکے علاج شروع کردیا گیا۔ ترجمان پمز اسپتال کا کہنا ہے کہ ڈاکٹر شاہد نواز کو سینے اور سر کے بائیں جانب گولیاں لگی ہیں، جس کی وجہ سے ان کی حالت انتہائی تشویشناک ہے تاہم ان کی زندگی بچانے کے لئے ہر ممکن کوشش کی جارہی ہے۔

واقعے کے بعد رینجرز نے اسپتال کے تمام دروازے بند کرکے سیکیورٹی کو سخت کردیا ہے جبکہ پولیس نے جائے وقوعہ سے شواہد جمع کرلیے ہیں

Published in Slides

اہور(سعید چودھری )ماضی کے دو ادوار میں رجوعہ ضلع چنیوٹ میں قیمتی معدنیات نکالنے کے ٹھیکہ میں اربوں روپے کی کرپشن کے الزامات کی تحقیقات کرکے ذمہ داروں کے خلاف مقدمہ کے اندراج کی منظوری کے لئے انٹی کرپشن اسٹیبلشمنٹ نے سمری وزیراعلی ٰ ہاﺅس بھجوا دی۔باوثوق ذرائع کے مطابق سمری میں کہا گیا ہے کہ انٹی کرپشن اسٹیبلشمنٹ مذکورہ ٹھیکہ کی کرپشن کے معاملہ پر کارروائی کی مجاز ہے ۔تفصیلات کے مطابق 2007میں اس وقت کی پنجاب حکومت نے ارتھ ریسورسز پرائیویٹ لمیٹڈ نامی ایک کمپنی کے ساتھ رجوعہ ضلع چنیوٹ میں اربوں روپے مالیت کی معدنیات نکالنے کے لئے باہمی مفاہمت کی یادداشت پر دستخط کئے اور بعدازاں 2008کی نگران حکومت کے دور میں اس کمپنی کے ساتھ ٹھیکہ کی منظوری دی گئی ۔جس کے تحت ارتھ ریسورسز پرائیویٹ لمیٹڈ کمپنی نے یہ معدنیات نکالنی تھیں اور اسے صاف کرنے کے لئے مل بھی لگانا تھی جس کی تکمیل پر معدنیات کے اس ذخیرے کے 75فیصد حصص ارتھ ریسورسز پرائیویٹ لمیٹڈ کمپنی کو منتقل ہوجاتے اور پنجاب معدنیاتی ترقیاتی کارپوریشن کے حصے میں 25فیصد حصص اور رائلٹی کے حقوق آتے ۔ذرائع کے مطابق یہ ٹھیکہ بغیر کسی اشتہار کے انتہائی جلد بازی میں دیا گیا ،اس حوالے سے متعلقہ افراد پر اربوں روپے کی خوربرد کی کوشش کا الزام ہے ۔2010میں وزیر اعلی ٰ شہباز شریف کی حکومت نے یہ ٹھیکہ منسوخ کردیا جسے مذکورہ کمپنی کے مالک ارشد وحید نے لاہور ہائی کورٹ میں چیلنج کیا ۔ہائی کورٹ نہ صرف ٹھیکہ کی منسوخی کو جائز قرار دیا بلکہ اس ڈیل میں ملوث افرادکے خلاف کارروائی کے لئے معاملہ نیب کو بھی ریفر کردیا ۔سپریم کورٹ نے بھی لاہور ہائی کورٹ کا فیصلہ برقرار رکھا تاہم نیب نے یہ قرار دے کر معاملہ داخل دفتر کردیا کہ "کرپشن "کے اس کیس میں رقم کی ریکوری کا معاملہ نہیں ہے اس لئے نیب کو کارروائی کا اختیار نہیں ۔بعدازاں یہ معاملہ انٹی کرپشن اسٹیبلشمنٹ کے سپردکردیا گیا ،جس نے انکوائری مکمل کرکے اندراج مقدمہ کی منظوری کے لئے سمری وزیر اعلیٰ ہاﺅس بھجوا دی ہے ۔ذرائع کے مطابق 2007-2008ءکی حکومتوں کے مرکزی عہدیداروں کے علاوہ اس وقت کے سیکرٹری معدنیات اور وزیر معدنیات کو بھی مذکورہ غیر قانونی ٹھیکے کا ذمہ دار ٹھہرایا گیا ہے ۔یادرہے کہ اس وقت کے وزیر معدنیات اب پاکستان تحریک انصاف کے میانوالی سے ممبر پنجاب اسمبلی ہیں ۔

Published in بزنس

اہور(سعید چودھری )ماضی کے دو ادوار میں رجوعہ ضلع چنیوٹ میں قیمتی معدنیات نکالنے کے ٹھیکہ میں اربوں روپے کی کرپشن کے الزامات کی تحقیقات کرکے ذمہ داروں کے خلاف مقدمہ کے اندراج کی منظوری کے لئے انٹی کرپشن اسٹیبلشمنٹ نے سمری وزیراعلی ٰ ہاﺅس بھجوا دی۔باوثوق ذرائع کے مطابق سمری میں کہا گیا ہے کہ انٹی کرپشن اسٹیبلشمنٹ مذکورہ ٹھیکہ کی کرپشن کے معاملہ پر کارروائی کی مجاز ہے ۔تفصیلات کے مطابق 2007میں اس وقت کی پنجاب حکومت نے ارتھ ریسورسز پرائیویٹ لمیٹڈ نامی ایک کمپنی کے ساتھ رجوعہ ضلع چنیوٹ میں اربوں روپے مالیت کی معدنیات نکالنے کے لئے باہمی مفاہمت کی یادداشت پر دستخط کئے اور بعدازاں 2008کی نگران حکومت کے دور میں اس کمپنی کے ساتھ ٹھیکہ کی منظوری دی گئی ۔جس کے تحت ارتھ ریسورسز پرائیویٹ لمیٹڈ کمپنی نے یہ معدنیات نکالنی تھیں اور اسے صاف کرنے کے لئے مل بھی لگانا تھی جس کی تکمیل پر معدنیات کے اس ذخیرے کے 75فیصد حصص ارتھ ریسورسز پرائیویٹ لمیٹڈ کمپنی کو منتقل ہوجاتے اور پنجاب معدنیاتی ترقیاتی کارپوریشن کے حصے میں 25فیصد حصص اور رائلٹی کے حقوق آتے ۔ذرائع کے مطابق یہ ٹھیکہ بغیر کسی اشتہار کے انتہائی جلد بازی میں دیا گیا ،اس حوالے سے متعلقہ افراد پر اربوں روپے کی خوربرد کی کوشش کا الزام ہے ۔2010میں وزیر اعلی ٰ شہباز شریف کی حکومت نے یہ ٹھیکہ منسوخ کردیا جسے مذکورہ کمپنی کے مالک ارشد وحید نے لاہور ہائی کورٹ میں چیلنج کیا ۔ہائی کورٹ نہ صرف ٹھیکہ کی منسوخی کو جائز قرار دیا بلکہ اس ڈیل میں ملوث افرادکے خلاف کارروائی کے لئے معاملہ نیب کو بھی ریفر کردیا ۔سپریم کورٹ نے بھی لاہور ہائی کورٹ کا فیصلہ برقرار رکھا تاہم نیب نے یہ قرار دے کر معاملہ داخل دفتر کردیا کہ "کرپشن "کے اس کیس میں رقم کی ریکوری کا معاملہ نہیں ہے اس لئے نیب کو کارروائی کا اختیار نہیں ۔بعدازاں یہ معاملہ انٹی کرپشن اسٹیبلشمنٹ کے سپردکردیا گیا ،جس نے انکوائری مکمل کرکے اندراج مقدمہ کی منظوری کے لئے سمری وزیر اعلیٰ ہاﺅس بھجوا دی ہے ۔ذرائع کے مطابق 2007-2008ءکی حکومتوں کے مرکزی عہدیداروں کے علاوہ اس وقت کے سیکرٹری معدنیات اور وزیر معدنیات کو بھی مذکورہ غیر قانونی ٹھیکے کا ذمہ دار ٹھہرایا گیا ہے ۔یادرہے کہ اس وقت کے وزیر معدنیات اب پاکستان تحریک انصاف کے میانوالی سے ممبر پنجاب اسمبلی ہیں ۔

Published in Slides

اسلام آباد: خیبر پختونخوا اور فاٹا میں پولیو وائرس سے متاثرہ مزید 4 کیسز سامنے آگئے ہیں جس کے بعد رواں برس اب تک پولیو سے متاثرہ بچوں کی تعداد 78 ہوگئی ہے۔

 

ایکسپریس نیوز کے مطابق بنوں کے علاقے ماما خیل کی ساڑھے 3 سالہ مدیحہ اور مٹھا خیل کی ڈیڑھ سالہ حلیمہ جبکہ شمالی وزیرستان کی تحصیل میران شاہ کے علاقے مچاس کی 2 سالہ لائبہ اور 2 سالہ الیسا میں پولیو وائرس کی تصدیق ہوئی ہے، حالیہ کیسز سامنے آنے کے بعد رواں برس ملک بھر میں اس مہلک بیماری کے باعث زندگی بھر کے لئے معذور بچوں کی تعداد 78 ہوگئی ہے۔

 

واضح رہے کہ عالمی ادارہ صحت کی جانب سے پاکستان میں پولیو کے کیسز میں اضافے اور دیگر ملکوں میں اس مرض کے اضافے کی وجہ سے پاکستانیوں پرانسداد پولیو ویکسی نیشن سرٹیفیکیٹ کے بغیر بیرون ملک سفر پر پابندی عائد ہے۔

Published in قومی خبریں

باجوڑ: نواگئی میں سیکیورٹی فورسز کی گاڑی کے قریب بارودی سرنگ کے دھماکے سے ایک اہلکار شہید جب کہ 2 زخمی ہو گئے۔

 

 

ایکسپریس نیوز کے مطابق باجوڑ ایجنسی کی تحصیل نواگئی میں سیکیورٹی فورسز کی گاڑی کو سڑک کنارے نصب بارودی سرنگ کے ذریعے نشانہ بنایا گیا جس کے نتیجے میں ایک اہلکار شہید جب کہ 2 زخمی ہو گئے۔ زخمیوں کو ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹر اسپتال منتقل کر دیا گیا ہے جہاں انھیں طبی امداد دی جا رہی ہے۔ دوسری جانب سیکیورٹی فورسز نے علاقے کو گھیرے میں لے کر سرچ آپریشن شروع کر دیا ہے۔

 

واضح رہے کہ 4 روز قبل بھی کرم ایجنسی سے پارا چنار جاتے ہوئے ایک گاڑی خومتہ کے مقام پر بارودی سرنگ سے ٹکرا گئی تھی جس کے نتیجے میں 6 افراد ہلاک اور 3 زخمی ہو گئے تھے۔

Published in قومی خبریں

چارسده فیس بک پر لائک کریں

چارسده فوٹو گیلری

Advertisement